پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کی جانب سے سکول بیسڈ اسیسمنٹ کا شیڈول جاری

لاہور ( چیچہ وطنی نیوز – ٹیچرز کمیونٹی ) پنجاب ایگزامینیشن کمیشن (پیک) کی طرف سے سکول بیسڈ اسیسمنٹ کا لنک مہیا کر دیا گیا ہے۔ سکولوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ 25 اپریل سے لے کر آٹھ مئی تک آن لائن پیپر تیار کرکے پرنٹ لینے ہیں ۔

9 مئی سے لے کر 21 مئی تک پیپر کنڈکٹ کرانے ہیں۔ 22 مئی سے لے کر 30 مئی تک پیپر چیک کرنے ہیں۔ 31 مئی کو رزلٹ سنایا جائے گا۔ اور رزلٹ کارڈز بچوں کو دیے جائیں گے.

PEC Exams 2022

ہر سکول نے اپنا پیپر خود تیار کرنا ہے۔ پیپر پرنٹنگ سکول نے این ایس بی فنڈ سے کرانی ہے۔ ہر پیپر پر مختلف کیو آر کوڈ ہوگا۔ افسران بالا اور دیگر ٹیمز پیپرز کے دوران سکولز کے وزٹ کرکے یہ باور کریں گے کہ ہر سکول اپنے پیپر خود تیار کرکے کنڈکٹ کرا رہاہے۔

لاگ ان کرنے کے لیے سکول کا ای ایم آئی ایس کوڈ پاسورڈ بھی ہوگا اور یوزر نیم بھی۔ لاگ ان کر کے  سب سے پہلا کام ٹیچرز نے پروفائل ایڈیٹ کرنا ہے۔  جس میں پاسورڈ  پہلی فرصت میں تبدیل کرنا لازم ہے۔

اس کے بعد  ایکٹو فون نمبر، ایکٹو ای میل  ایڈریس  درج  کرنا ہے۔ اس کے علاوہ سکول ایڈریس، سکول لیول، سکول لڑکوں کا ہے یا لڑکیوں کا وغیرہ جیسی معلومات  درج کرنی ہیں.

ٹیچرز  جیسے ہی   “جینریٹ پیپر ” بٹن  پر کلک کریں گے سسٹم دو چیزیں پوچھے گا۔ گریڈ اور پیپر ، آپ نے متعلقہ کلاس سیلیکٹ کرنی ہے اور متعلقہ مضمون  جس کا پیپر آپ تیار کرنا چاہ رہے ہیں۔

اس کے بعد آپ میڈیم سیلیکٹ کرسکتے ہیں۔ اردو/ انگلش  یا  دونوں۔ جیسے آپ سیلیکٹ کریں گے پیپر اسی طرح تیار ہوگا۔ پرنٹنگ کا خرچ بچانے کے لیے آپ ایک صفحے پر دو کالم میں پیپر تیار کرسکتے ہیں۔ کالم  آپشن بھی موجو د ہوگی ۔

پیپر  حل  کرانے کے لیے آن لائن  یہ آپش بھی موجود ہوگی کہ آپ  انشائیہ سوالوں کے  نیچے جگہ چھوڑ کر جواب پیپر کے اوپر ہی لکھوانا چاہتے ہیں یا ایکسٹرا شیٹ مہیا کرنا چاہتے ہیں۔ اس مقصد کے لئے سپیسنگ کا آپشن استعمال کریں.

جیسے ہی پیپر جینٹریٹ ہوگا اس کے ساتھ پیپر کی جوابی کاپی بھی بنے گی۔ جس کو آپ نے  پیپر کے ساتھ ہی ڈاونلوڈ کرکے محفوظ کر لینا ہے۔ تاکہ پیپر چیک کرتے ہوئے آسانی رہے۔

ایک پیپر کے آپ دس ورژن تک تیار کرسکتے ہیں۔ اس بات کا انحصار بچوں کی تعداد اور سیکشنز پر ہے۔ یہ پیپر  کسی بھی ڈیوائس موبائل/ٹیبلیٹ/کمپیوٹر  سے کہیں بھی بیٹھ کر تیار کیے جاسکتے ہیں۔

مختلف کلاسز کا پیپر پیٹرن مختلف ہوگا۔ کچی، اول اور دوم کلاس کے پیپر زبانی ہونگے۔ ٹیچر زبانی سوال پوچھے گا اور بچے زبانی جواب دینگے۔

کچی، اول اور دوم کے ہر مضمون کا پرچہ  پانچ (5) سیکشنز  پر مشتمل ہوگا۔ ہر سیکشن میں پانچ (5) سوال ہونگے۔ ہر سوال کےچار ( 4 )  نمبر ہونگے۔ اس طرح   ہر پیپر  100 نمبر کا ہوگا۔

کلاس سوئم، چہارم اور پنجم کے پیپر معروضی اور انشائیہ حصوں پر مشتمل ہونگے۔ ہر پرچے میں پچیس معروضی سوالات ہونگے۔  ایک  معروضی سوال کے دو نمبر ہونگے۔ اس طرح معروضی حصہ ٹوٹل پچاس (50) نمبروں کا ہوگا۔ ہر انشائیہ پیپر میں  پانچ (5)  سوالات ہونگے۔ہر سوال کے دس نمبر ہونگے۔ ان سوالوں کی  مزید جزو بھی  ہوسکتی ہیں۔ اس طرح یہ حصہ بھی 50 نمبر کا ہوگا.

پرائمری کلاسز میں اسلامیات کے دو پیپر ہونگے۔ جس میں اسلامیات کا پیپر  سو (100) نمبر ز کا ہوگا۔ جبکہ تدریس القرآن کا الگ سے 50 نمبر کا پیپر ہوگا۔

ڈیٹ شیٹ بناتے وقت تدریس القران کو  الگ سے پرچے  کا درجہ دے کر دن  مقرر کرنا ہے. معروضی حصہ  بتیس (32) سوالوں  پر مشتمل ہوگا۔ ہر معروضی سوال کے 1.5 نمبر ہونگے۔

کلاس چھٹی، ساتویں اور آٹھویں   کے ہر  انشائیہ پیپر میں  پانچ (5)  سوالات ہونگے ۔ ان سوالوں کی  مزید جزو  بھی ہوسکتی ہیں. اسلامیات کے دو پیپر ہونگے۔

آٹھ مضامین  (اردو، انگلش، ریاضی، سائنس، معاشرتی علوم، ترجمتہ القرآن +اسلامیات اور کمپیوٹر سائنس)۔ ان کے علاوہ مضامین جیسے اطلاقی برقیات، زراعت، ڈرائنگ، عربی اور ہوم اکنامکس وغیرہ  کے پرچہ جات  متعلقہ مضمون کا ٹیچر خود تیار کرے گا.

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.