سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی خفیہ آڈیو منظر عام پر

اسلام آباد (چیچہ وطنی نیوز – 22 نومبر 2021 – ارشد فاروق بٹ) سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کا ایک مبینہ آڈیو کلپ منظر عام پر آیا ہے جس میں وہ فون پر کسی کو ہدایات دیتے ہیں کہ عمران خان کو اقتدار میں لانےکے لیے نواز شریف اور مریم نواز کو سزا دینی ہو گی۔

اس آڈیو کلپ کو مبینہ طور پر سابق چیف جسٹس ثاقب نثار سے منسوب کیا گیا ہے ۔ تاہم جسٹس ثاقب نثار نے مبینہ آڈیو کلپ کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ آواز میری نہیں ہے، اسے مجھ سے منسوب کیا گیا ہے، میں نے کبھی کسی کو اس حوالے سے ہدایات نہیں دیں۔ میں قانونی اقدام کے بارے میں سوچ رہا ہوں۔

سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے نواز شریف اور مریم نواز سے متعلق مبینہ آڈیو کلپ پر سوشل میڈیا پر تبصرے جاری ہیں اور مختلف رہنماوں کے بیانات سامنے آ رہے ہیں۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے سوشل میڈیا سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ سابق چیف جسٹس کی نئی آڈیو ٹیپ کا منظر عام پر آنا ظاہر کرتا ہے کہ کیسے ایک بڑی سازش کے ذریعے نواز شریف اور مریم نواز کو ٹارگٹ کر کے سیاسی عمل سے علیحدہ رکھا گیا۔

شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ غلط چیزوں کو درست کرنے کا وقت آ گیا ہے، قوم نظام انصاف کی جانب دیکھ رہی ہے۔

تجزیہ نگار سلمان غنی کا کہنا ہے کہ ایک ایک چیز کھل کر سامنے آ رھی ہے۔ تاریخ کے بدتریں کرداروں کے چہرے بے نقاب ھوتے جا رھے ھیں۔ کس نے کیا کیا، کس کے کہنے پر کیا اور کیونکر کیا، سب کچھ کھلتا جارھا ھے۔ اوراللہ دنیا سے جانے سے پہلے ھر شخص کا باطن ایکسپوز کر کے رکھ دیتا ھے، ھو سکتا ھے کہ شر سے کوئ خیر کا پہلو نکلنا ھو۔

مسلم لیگ کی ایم پی اے حنا پرویز بٹ کا کہنا ہے کہ ‏سابق وزیراعظم اور ان کی بیٹی کے ساتھ ہونے والے ظلم کا ازالہ کرنا ہوگا۔

سازش کے تحت دی جانے والی سزاؤں کو اب کالعدم قرار دینا ہوگا۔ پہلے جسٹس شوکت صدیقی ، پھر ارشد ملک، پھر جج رانا شمیم اور اب آڈیو کلپ نے سارا گندا کھیل بے نقاب کر دیا ہے۔

About Arshad

Arshad
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں، چیچہ وطنی نیوز پر آپ اردو ادب اور کالمز کی کیٹیگریز اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے